صفحہ اول تجارت سپریم کورٹ نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کا فرانزک آڈٹ کرانے کا فیصلہ کرلیا

سپریم کورٹ نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کا فرانزک آڈٹ کرانے کا فیصلہ کرلیا

53 second read
0
0
25
Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

پٹرولیم مصنوعات پر ہوشربا ٹیکسز کے اطلاق سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات پر آج بھی ڈھاکہ ریلیف ٹیکس لگا ہے تاہم ہم قیمتوں کا فرانزک آڈٹ کروائیں گے۔چیف جسٹس پاکستان ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ میں پٹرولیم مصنوعات پر ہوشربا ٹیکسز کے اطلاق سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا کہ پٹرولیم مصنوعات پر 25 فیصد ٹیکس لگتا ہے اور جب بھی عالمی مارکیٹ میں قیمتیں کم ہوتی ہیں سیلز ٹیکس لگا دیا جاتا ہے، پٹرولیم مصنوعات پر جب عوام کو ریلیف دینے کی باری آتی ہے تو ٹیکس لگ جاتا ہے، جسٹس اعجاز الاحسن نے استفسار کیا کہ پٹرولیم مصنوعات پر کس قسم کے ٹیکسز کا اطلاق ہوتا ہے اورعالمی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی کیا قیمتیں ہیں اور یہاں پر پٹرولیم مصنوعات کی کیا قیمتیں ہیں۔ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ خطے بھر کے مقابلے میں پاکستان میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں سے کم ہیں، چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا کہ بھارت سے قیمتوں کا موازنہ نہ کریں، کیا بھارت کے ساتھ ہمارا آئی ٹی میں کوئی مقابلہ ہے، بھارت میں آئی ٹی انڈسٹری کی ترقی پاکستان سے زیادہ ہے، پٹرولیم مصنوعات پر آج بھی ڈھاکہ ریلیف ٹیکس لگا ہے، ہم قیمتوں کا فرانزک آڈٹ کروائیں گے، ہمیں چارٹ بنا کر دیں کہ پٹرولیم مصنوعات پر کتنی قسم کے ٹیکسز کا اطلاق ہوتا ہے۔عدالت نے متعلقہ وزارت اور ادارے کو تحریری جواب داخل کرانے اور پیٹرولیم مصنوعات کے حوالے سے وضاحت کرنے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی سماعت ایک ہفتہ تک ملتوی کردی۔

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit
مزید مماثل خبریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Check Also

کراچی: سپرہائی وے کی منڈی میں جانوروں کی قلت، قیمتیں آسمان پر پہنچ گئیں

کراچی: سپرہائی وے پر لگنی والی مویشی منڈی میں عید سے ایک دن قبل ہی جانوروں کی قلت ہوگئی۔ م…