صفحہ اول Featured ایران اور روس کے صدور کی ٹیلیفون پر گفتگو/ شام پردوبارہ حملہ دنیا میں بدنظمی کا باعث بنے گا

ایران اور روس کے صدور کی ٹیلیفون پر گفتگو/ شام پردوبارہ حملہ دنیا میں بدنظمی کا باعث بنے گا

53 second read
0
0
21
Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

کریملن ذرائع کے مطابق روس کے صدر ولادیمر پوتین اور اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے شام کی تازہ ترین صورتحال کے بارے میں ٹیلیفون پر گفتگو اور تبادلہ خیال کرتے ہوئے کہا ہے کہ مغربی ممالک کے شام پر دوبارہ حملے کی صورت میں عالمی سطح پر بدنظمی اور بد امنی پھیل جائے گي۔

پاکستان ویوز نے اسپوٹنک کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ کریملن ذرائع کے مطابق روس کے صدر ولادیمر پوتین اور اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے شام کی تازہ ترین صورتحال کے بارے میں ٹیلیفون پر گفتگو اور تبادلہ خیال کرتے ہوئے کہا ہے کہ مغربی ممالک کے شام پر دوبارہ حملے کی صورت میں عالمی سطح پر بدنظمی اور بد امنی پھیل جائے گي۔

روسی صدر پوتین نے اس گفتگو میں کہا کہ امریکہ اور مغربی ممالک کی طرف سے بین الاقوامی قوانین کی آشکارا اور کھلی خلاف ورزی ناقابل قبول ہے۔ پوتین نے کہا کہ امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی طرف سے شام پر دوبارہ حملے کی صورت میں  دنیا میں بدامنی اور عدم استحکام پیدا ہوجائے گا۔ پوتین نے کہا کہ کسی بھی ملک کو بین الاقوامی قوانین سے باہر کسی ملک پر فوجی یلغار کرنے کا حق نہیں۔ امریکہ اور مغربی ممالک بین الاقوامی قوانین کی کھلی خلاف ورزی کررہے ہیں جس سے عالمی امن کو خطرات لاحق ہوگئے ہیں۔

ایرانی صدر حسن روحانی نے بھی امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی طرف سے عالمی قوانین کی پامالی پر شدید خدشات کا اظہار کرتے ہوئے شام پر امریکی حملے کی مذمت کی۔ دونوں رہنماؤں نے مشرق وسطی اور یمن کے موضوع پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit
مزید مماثل خبریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Check Also

سرکاری گاڑیاں چھنوانے میں سرکاری ملازمین کے ملوث ہونے کا انکشاف

اے سی ایل سی پولیس کے ہاتھوں گرفتارملزم نے تفتیش کے دوران انکشاف کیا ہے کہ گزشتہ دنوں سچل …