More share buttons
Share with your friends










Submit
انٹرٹینمنٹ

’اپنے کمرے کے واش روم سے نہا کر برہنہ حالت میں ہی باہر نکلا تو میں نے دیکھا وہاں ایک شخص ۔۔۔‘رنویر سنگھ نے ایسا واقعہ سنا دیا کہ سن کر دپیکا کے بھی رنگ اڑ جائیں گے

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

ممبئی: بھارتی فلم انڈسٹری کے چاکلیٹی ہیرو اور شہرت کو بلندیوں کو چھونے والے رنویر سنگھ نے کہا ہے کہ میں نے بالی ووڈ میں اپنی جگہ بنانے کیلئے تین سال تک جدوجہد کی،مشہور ہونے کے نقصانات بھی بہت ہیں ،ایک دن میں اپنے ہوٹل کے واش روم میں نہا رہا تھا ،جب میں نہا کر ڈریسنگ روم پہنچا تو شرم سے لال پیلاہو گیا کیونکہ میں نے کپڑے بھی نہیں پہنے تھے جبکہ ایک شخص وہاں میری ویڈیو بنا رہا تھا ،میں نے بھاگ کر اس شخص کا موبائل چھینا اور اس میں سے بنائی گئی ویڈیو ڈیلیٹ کی ،اس طرح کے واقعات ایسے تواتر سے اور اتنے زیادہ ہو جاتے ہیں کہ کچھ بھی نہیں کہہ سکتے۔

معروف بھارتی نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے رنویر سنگھ کا کہنا تھا کہ ان کی حال ہی میں ریلیز ہونے والی فلم’’ پدماوت‘‘ کی ریلیز کے وقت جو کچھ بھی وہ بولنا چاہتے تھے ، فلم سازوں نے انہیں بولنے نہیں دیا، فلم کا پورا تنازع پریشان کرنے والا تھا۔انہوں نے اپنے اور دپیکا پڈکون کے تعلقات کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میرا اور دپیکا کا باہمی احترام کا رشتہ ہے، وہ اداکار کے طور پر دپیکا کی کافی تعریف کرتے ہیں لیکن وہ انہیں ایکٹر ہی نہیں سمجھتیں، ریلیشن شپ کا مطلب ہوتا ہے آپسی پیار،ہمارے ریلیشن شپ میں میں انہیں ایکٹنگ کی سطح پر کافی آگے رکھتا ہوں تاہم وہ مجھے وہ مقام نہیں دیتیں ،میرے پاس ان سے سیکھنے کیلئے کافی کچھ ہے،انہیں اپنی زندگی میں پا کر مجھے بہت اچھا محسوس ہوتا ہے۔

رنویر سنگھ کا کہنا تھا کہ مجھے لوگوں کے ساتھ باتیں کرتا پسند ہے، میں اب تک یقین نہیں کرتا کہ میں ایک اداکار ہوں اور مشہور ہوں ، جب لوگ مجھے دیکھ کر پرجوش ہوجاتے ہیں تو میں بھی جوش میں آجاتا ہوں لیکن پرینکا چوپڑا مجھ سے کہتی ہے کہ تو وہ لڑکا ہے جو ہر مرتبہ گھر جا کر بولے گا دیکھو ماں میں سٹار بن گیا۔ رنویر کے مطابق وہ بچپن سے ہی بالی وود سے بے حد متاثر رہے ہیں، یہاں کیرئیر بنانا اور ناظرین کا اتنا پیار ملنا میرے لئے خواب جیسا ہے،میں نے بالی ووڈ میں اپنی جگہ بنانے کیلئے تین سال تک جدوجہد کی۔

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit
ٹیگز
مزید دیکھیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے