More share buttons
Share with your friends










Submit
انٹرٹینمنٹ

محض پانچ سو روپے لیکر ممبئی آنیوالی اداکارہ آج کروڑوں کی مالک کیسے بنی، جانیئے آپ بھی

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

ممبئی: بالی ووڈ کی کامیاب ترین فلم ’’باغی2‘‘کی مرکزی اداکارہ دیشا پٹانی نے اپنے گزرے ہوئے مشکل دور کی یادیں تازہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب وہ ممبئی آئی تھیں تو ان کے پاس محض 500 روپے تھے۔محض 3 دنوں میں 73 کروڑ سے زائد کمائی کرکے رواں سال کی سب سے کامیاب قرار دی جانے والی فلم’’باغی2‘‘کی خوبصورت اور باصلاحیت اداکارہ دیشا پٹانی نے حال ہی میں دئیے گئے انٹرویو میں فلمو ں میں انٹری سے قبل اپنے مشکل دور کی یادیں تازہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب وہ ممبئی آئیں تو ان کے پاس صرف 500 روپے تھے۔ دیشا نے کہا ان کا تعلق فلمی گھرانے سے نہیں ہے لہٰذا اس نگری میں جگہ بنانے کیلئے انہیں بہت محنت کرنی پڑی۔ دیشا نے کہامجھے اداکاری کرنا بے حد پسند ہے اور میں ابتدا میں اپنی پرفارمنس دکھانے کا صرف ایک موقع چاہتی تھی لیکن اس کے ساتھ میں بہت زیادہ ہوشیار بھی تھی۔ ابتدا میں مجھے بہت سارے فلمسازوں کی جانب سے رد کیاگیا ایسا کئی بار ہواکہ فلم کی شوٹنگ شروع ہوتی تھی اور بغیر وجہ بتائے مجھے اس فلم سے نکال دیا جاتا تھا لیکن اس چیز نے مجھے بہت کچھ سیکھایا اور مضبوط بنایا۔دیشا نے مزید کہا شوبز میں قدم جمانے کیلئے میں اپنی پڑھائی ادھوری چھوڑ کر ممبئی آگئی یہاں میں کسی کو نہیں جانتی تھی میں جب ممبئی آئی تو میرے پاس پاس صرف 500 روپے تھے، اس دوران میں اکیلی رہتی تھی میرے پاس زیادہ پیسے نہیں ہوتے تھے ۔ ابتدا میں میرے پاس جب جاب نہیں تھی تو مجھے یہ فکر ستاتی رہتی تھی کہ میں اپنے گھر کا کرایہ کس طرح دوں گی۔ تاہم میں نے کبھی اپنے گھر والوں سے پیسوں کا تقاضہ نہیں کیا۔واضح رہے کہ ’’باغی2‘‘دیشا پٹانی کی تیسری فلم ہے اس سے قبل وہ بھارتی کرکٹر ایم ایس دھونی کی زندگی پر بننے والی فلم ’’ایم ایس دھونی؛ ان کہی کہانی‘‘اور بھارت چائنیز کے اشتراک سے بننے والی فلم ’’کنگ فو یوگا‘‘میں اداکاری کے جوہر دکھاچکی ہیں۔ محض 500 روپے لے کر ممبئی آنے والی دیشا پٹانی کا شمار آج بھارت کی صف اول کی اداکاراؤں میں ہورہا ہے۔ ان کی فلم ’’باغی2‘‘ محض 3 دنوں میں 73 کروڑ 10 لاکھ کا کھڑکی توڑ بزنس کرکے کامیاب فلم بن گئی ہے۔

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit
ٹیگز
مزید دیکھیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے