More share buttons
Share with your friends










Submit
اسلام آبادسندھپاکستانپنجاب

اسلام آباد ہائیکورٹ نے صادق سنجرانی کے خلاف درخواست مسترد کر دی

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

اسلام آباد(24 مارچ2021ء) اسلام آباد ہائیکورٹ نے صادق سنجرانی کے خلاف یوسف رضا گیلانی کی درخواست مسترد کر دی۔تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ نے چئیرمین سینیٹ کے خلاف یوسف رضا گیلانی کی درخواست پر محفوظ کیا گیا فیصلہ سنا دیا ہے۔ آج عدالت میں چیئرمین سینیٹ الیکشن کے خلاف یوسف رضا گیلانی کی درخواست پر سماعت ہوئی، اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے درخواست پرفیصلہ محفوظ کیا جو اب سنا دیا گیا ہے۔
فیصلے میں اسلام آباد ہائیکورٹ نے درخواست ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے مسترد کر دی۔
سابق وزیراعظم کے وکیل نے کہا تھا کہ صدر نے سینیٹر مظفر حسین شاہ کو الیکشن میں پریذائیڈنگ افسر مقرر کیا عدالت نے استفسار کیا کہ چیئرمین سینیٹ الیکشن میں الیکشن کمیشن کی کوئی شمولیت نہیں؟ جس پر فاروق ایچ نائیک نے عدالت میں کہا کہ چیئرمین سینیٹ الیکشن میں الیکشن کمیشن کا کوئی کردار نہیں. چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ پارلیمان کی اندرونی کارروائی کے استحقاق کے آئین آرٹیکل 69 سے کیسے نکلیں گے ؟ پارلیمان کی اندرونی کارروائی عدالت میں چیلنج کی جا سکتی ہے ؟. فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ اگر طریقہ کار میں کوئی بے ضابطگی ہو تو وہ عدالت میں چیلنج نہیں کی جا سکتی رولز میں بیلٹ پیپر یا ووٹ سے متعلق کچھ نہیں، رولز اس حوالے سے خاموش ہیں سیکرٹری سینیٹ نے ہدایات دیں کہ خانے کے اندر کہیں بھی مہر لگائی جا سکتی ہے. انہوں نے کہا کہ شیری رحمان، سعید غنی اور میں نے بیان حلفی عدالت میں دیا ہے کہ سیکرٹری سینیٹ نے خانے کے اندر کہیں بھی مہر لگانے کا کہا تھا اور سیکرٹری سینیٹ کے کہنے کے بعد ہم نے اپنے سینیٹرز کو کہیں بھی مہر لگانے کا کہا واضح رہے کہ پیپلزپارٹی نے سینیٹ سیکرٹریٹ نے ایوان بالا کے چیئرمین کے لیے ہونے والے انتخابات کے بیلٹ پیپرز قانونی ٹیم کو فراہم کرنے کی درخواست کی تھی جسے مسترد کردیا گیا تھا‘پیپلز پارٹی کی قانونی ٹیم، جس کے ممبران میں سینیٹ کے 3 سابق چیئرمین، فاروق ایچ نائیک، رضا ربانی، نیئر حسین بخاری، پنجاب کے سابق گورنر سردار لطیف خان کھوسہ اور جاوید اقبال، شامل ہیں. پیپلزپارٹی کی قانونی ٹیم کو 12 مارچ کو ایوان بالا میں ہونے والی تمام سرگرمیوں کی مصدقہ کاپیاں اس لیے چاہیے تھیں تاکہ کسی مناسب فورم کے سامنے ووٹوں کے رد کیے جانے کو وہ چیلنج کرسکیںسینیٹ سیکرٹریٹ نے قانونی ٹیم کو صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی جانب سے پریزائیڈنگ آفیسر کی نامزدگی کے حوالے سے وزارت پارلیمانی امور سے ہونے والے مواصلات کا ریکارڈ بھی فراہم کیا تھا. یہاں یہ بات واضح رہے کہ سینیٹ چیئرمین کے انتخاب کے لیے پریزائڈنگ آفیسر مظفر حسین شاہ نے یوسف رضا گیلانی کے پولنگ ایجنٹ فاروق ایچ نائیک سے کہا تھا کہ اگر وہ ووٹوں کے مسترد ہونے کے فیصلے سے مطمئن نہیں ہیں تو ٹربیونل کے سامنے شکایت درج کریں

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close