More share buttons
Share with your friends










Submit
Featuredاسلام آباد

کرنٹ اکاﺅنٹ خسارہ سیاحت سے پورا کریں گے، دنیا میں سبز پاسپورٹ کی عزت کرائیں گے، عمران خان

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

اسلام آباد: وزیراعظم پاکستان عمران خان نے کہا ہے کہ کرنٹ اکاﺅنٹ خسارہ سیاحت سے پورا کریں گے، دنیا میں سبز پاسپورٹ کی عزت کرائیں گے، اووسیز پاکستانیوں سے اپیل ہے کہ ”پاکستان بناؤ سرٹیفکیٹ “ خریدیں، کسی حکومت کو اتنے خسارے کا سامنا نہیں کرنا پڑا، توازن ادائیگیوں کا بحران ابھی ختم نہیں ہوا، پاکستان کی یہ حالت کرپشن اور بدنظمی کی وجہ سے ہوئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اوور سیز پاکستانی شوکت خانم ہسپتال کا آدھا خسارہ تین ارب روپے بھیجتے ہیں، یہ پاکستان کی تاریخ میں سب سے مشکل وقت ہے،اس کی وجہ یہ ہے کہ کسی حکومت کو ملکی تاریخ میں اتنے خساروں کا سامنا نہیں کرنا پڑا، اوور سیز پاکستانی ملک سے بہت محبت کرتے ہیں، آئی ایم ایف کی شروع میں شرائط بہت مشکل تھیں اور ہمارے پاس آئی ایم ایف کے پاس جانے کا آسان راستہ تھا لیکن ہمیں لوگوں کی مشکلات کا احساس تھا، اس لئے ہم نے کوشش کی کہ دیگر ممالک سے رابطہ کرکے اپنی مشکلات کم کریں، اس وقت بھی خسارہ ختم نہیں ہوا۔

انہوں نے کہا کہ پہلے ہمارے ملک کی عزت تھی اور جس طرح یہ ملک آگے جا رہا تھا کہ باہر کے ملکوں میں ہمار ے سربراہوں کی عزت ہوتی تھی، موجودہ حالات بد انتظامی اور کرپشن کی وجہ سے ہوئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو اللہ تعالیٰ نے بہت خوبصورتی دی ہے، دنیا کی آدھی بلند ترین چوٹیاں ہیں، ہماری پہاڑی سیاحت سوئٹزرلینڈ سے دگنا ہے، پشاور دنیا کا قدیم ترین شہر ہے، لاہور اور ملتان بھی قدیم ترین شہر ہیں، جو کچھ ہمارے پاس ہے وہ دنیا میں کہیں نہیں ہے، ہم نے دنیا کیلئے پاکستان کھول دیا ہے، ہم سیاحت سے ہی اپنا خسارہ پورا کرلیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس 12 کروڑ پاکستانی نوجوان ہیں، یہ صورتحال سرمایہ کاری کیلئے موزوں ہے، ہم سرمایہ کاروں کیلئے آسانیاں پیدا کررہے ہیں،میں اوور سیز پاکستانیوں سے اپیل کرتا ہوں کہ ہمارے سرٹیفکیٹس خریدیں اور ملک میں آکر سرمایہ کاری کریں، اوورسیز پاکستانیوں سے کہوں گا کہ روپیا لینا ڈالر نہ لینا،پاکستان اوپر جاتاہے تو دنیا میں پاکستانیوں کی عزت بڑھتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ مجھے پتہ ہے کہ نائن الیون کے بعد پاکستانیوں پر کیا گزری ؟میںبھی اوورسیز پاکستانی رہ چکا ہوں ، اوورسیز پاکستانی دو دو نوکریاں اور ڈبل شفٹ کرتے ہیں،ان میں ملک کی قدر بہت زیادہ ہے، وہ سوچتے ہیں کہ کما کر پاکستان واپس چلے جائیں گے لیکن بچوں کی وجہ سے پھر وہیں رک جاتے ہیں،ہم اپنے سفارت  خانوں کو ہدایات دے رہے ہیں کہ اوور سیز پاکستانیوں کو مکمل طور پر سہولیات فراہم کریں،ہم اوور سیز پاکستانیوں کیلئے مزید سہولیات بڑھاتے رہیں گے۔انہوں نے کہا کہ میں زلفی بخاری کوداد دیتا ہوں کہ وہ اوور سیز پاکستانیوں کیلئے سہولیات پیدا کررہے ہیں، زراعت کیلئے چین سے ٹیکنالوجی لانے پر بات کررہے ہیں، دنیا میں سبز پاسپورٹ کی عزت کرائیں گے اور اب ہم کسی اور کی جنگ نہیں لڑیں گے ۔ وزیر اعظم کا کہناتھا کہ ہمارے لئے بڑا بہترین تجربہ ہے کہ مجھ ایک ایک ڈیپارٹمنٹ کا پتہ چل گیاہے کہ ہم کیوں فیل ہوئے ؟یہ ادارے اب اوپر جائیں گے اور آپ دیکھیں گے کہ یہی ملک پھر اوپر جائے اور ہم پورے خطے کیلئے مثال بنیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ میں اوور سیز پاکستانیوں سے کہتا ہوں کہ وہ پاکستان بناؤ سرٹیفکیٹ خریدیں اس سے جہاں ہم کومدد ملے گی وہاں ان کوبھی بہترین ریٹرن ملے گا ۔

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit
ٹیگز
مزید دیکھیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے