More share buttons
Share with your friends










Submit
سندھ

مقدمہ کو کراچی سے اسلام آباد منتقل کرنے کا کوئی جواز نہیں، مراد علی شاہ

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

سپریم کورٹ نے جعلی اکاؤںٹس کیس میں مراد علی شاہ اور بلاول بھٹو زرداری کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے ساتھ کیس کو نیب کے حوالے کرنے کا حکم بھی دیا تھا جس کے خلاف وزیراعلیٰ سندھ نے درخواست دائر کردی ہے۔

مراد علی شاہ نے سپریم کورٹ میں نظرثانی اپیل دائر کی جس میں وفاق، نیب اور جے آئی ٹی کو فریق بنایا گیا، درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ جے آئی ٹی نے جعلی اکاؤنٹس معاملہ کی تحقیقات کرنا تھی لیکن جے آئی ٹی میرے خلاف جعلی اکاؤنٹس ٹرانزیکشنز میں ملوث ہونے کا ثبوت نہ لاسکی۔
درخواست میں کہا گیا کہ سندھ اسمبلی نے شوگر ملز کو سبسڈی کی منظوری دی اور سبسڈی دینے کی قرار داد پی ٹی آئی کے خرم شیر زمان کی جانب سے پیش کی گئی، مقدمہ کو کراچی سے اسلام آباد منتقل کرنے کا کوئی جواز نہیں ہے جب کہ تحریری فیصلہ میں جے آئی ٹی رپورٹ سے نام نکالنے کے زبانی حکم کو شامل نہیں کیا گیا، معاملہ پر عمل در آمد بینچ تشکیل دینے کا بھی جواز نہ تھا لہذا سپریم کورٹ فیصلہ پر نظر ثانی کرے۔

دوسری جانب سابق صدر آصف زرداری نے سپریم کورٹ میں نظر ثانی کیس کی جلد سماعت کی درخواست دائر کردی ، جلد سماعت کی درخواست ایڈووکیٹ لطیف کھوسہ اور شہباز کھوسہ کی جانب سے دائر کی گئی جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ انصاف کے تقاضوں کے پیش نظر نظر ثانی کو 12 فروری کو سماعت کے لیے مقرر کیا جائے، نظر ثانی درخواست پر 12 فروری کو سماعت کی جائے۔
واضح رہے سپریم کورٹ نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit
ٹیگز
مزید دیکھیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button