More share buttons
Share with your friends










Submit
سندھ

آئندہ مالی سال ترقی کی شرح 4 فیصد سے زائد رہنے کا امکان: گورنر اسٹیٹ بینک

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

کراچی: گورنر اسٹیٹ بینک رضا باقر نے کہا ہے کہ کورونا کی پہلی لہر کے مقابلے تیسری لہر میں معاشی حالات بہتر ہیں۔

 

آئندہ مالی سال ترقی کی شرح 4 فیصد سے زائد رہنے کا امکان ہے،معیشت کے مختلف شعبوں میں بہتری آرہی ہے۔

روشن ڈیجیٹل اکائونٹس کی تعداد میں اضافہ اور ببرون ملک سے پیسہ آرہا ہے، ہائوسنگ ، تعمیراتی شعبوں سمیت دیگر شعبوں کو بھی مانیٹر کیا جا رہا ہے گذشتہ برس کی نسبت اس برس ترسیلات میں 26 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

پیرکوپاکستان اسٹاک ایکسچینج میں تقریب سے خطاب کے دوران رضا باقر نے کہا کہ کورونا سے قبل معاشی اشاریے مستحکم تھے۔

کورونا وبا کے چیلنج کے باوجود بہتر معاشی پالیسی اپنائی۔انہوں نے کہاکہ ترسیلات زر میں اضافہ خوش آئند ہے، رواں سال مارچ میں ترسیلات زر کا حجم 2ارب 70 کروڑ ڈالر رہا، بیرون ملک مقیم پاکستانیوں نے مسلسل دسویں مہینے 2 ارب ڈالر کی ترسیلات بھیجیں۔

انہوں نے بتایا کہ گزشتہ مارچ کے مقابلے میں رواں سال مارچ کی ترسیلات زر 43فیصد زائد ہیں۔

رواں مالی سال کے 9 مہینوں کی ترسیلات 21 اعشاریہ 50 ارب ڈالر رہیں جبکہ رواں مالی سال کی9 مہینوں کی ترسیلات زر گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں 26 فیصد زائد ہیں۔

رضا باقر نے لارج اسکیل مینوفیکچرنگ (ایل ایس ایم) کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ سالانہ بنیاد پر ایل ایس ایم میں 9 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایک سال پہلے اگر یہ تقریب ہو رہی ہوتی اور ایل ایس ایم کا تذکرہ ہوتا تو اس کے تمام اشاریے منفی تھے۔انہوں نے کہاکہ سپلائی اور ایل ایم ایس کے شعبوں میں اشاریے مثبت ہیں جبکہ گزشتہ برس تمام اشاریے منفی تھے۔

 

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit
Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close