More share buttons
Share with your friends










Submit
دنیاپنجاب

فارن فنڈڈ فتنے نے جھوٹ بولنے کے سوا کوئی کام نہیں کیا

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

لندن: جھوٹ، مکاری اور فریب سے قومی سلامتی کے خلاف سازشی بیانیہ تیار کیا گیا، جس کے لیے ڈی جی آئی ایس آئی کو منظر عام پر آنا پڑا۔

مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے لندن میں پریس کانفرنس میں  کہا کہ لانگ مارچ پر کروڑوں روپے خرچ ہو رہے ہیں لیکن اس کا کوئی قومی مقصد نہیں ہے، اس کا ہدف صرف آرمی چیف کی تقرری ہے۔

پریس کانفرنس کی ابتداء میں مریم نواز نے لانگ مارچ میں جاں بحق ہونے والی خاتون صحافی صدف نعیم کے لواحقین سے تعزیت کی اور ان کے لیے دلی جذبات کا اظہار کیا۔

مریم نواز نے کہا ہے کہ عمران خان نے عوام کے ٹیکس کا پیسہ اپنے لانگ مارچ پر لگادیا، قومی وسائل کو مارچ کے نام پر بے دردی سے لوٹا جارہا ہے، اتنے لوگ لانگ مارچ میں نہیں ہوتے جتنے لوگ پنجاب حکومت کے اس کی حفاظت پر مامور ہیں۔

مریم نواز نے کہا کہ جھوٹ، مکاری اور فریب سے قومی سلامتی کے خلاف سازشی بیانیہ تیار کیا گیا، جس کے لیے ڈی جی آئی ایس آئی کو منظر عام پر آنا پڑا۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کے جرائم کی فہرست بہت طویل ہے، اس کی سیاسی جدوجہد مشرف سے شروع ہو کرآنکھ، کان، ناک کہنے والوں تک جاتی ہے۔
مریم نواز نے کہا کہ شہباز شریف آرمی چیف کی تقرری آئین کے مطابق کریں گے، لانگ مارچ عمران خان کا آخری کارڈ تھا وہ بھی ہاتھ سے نکل گیا کیونکہ اسے عوام نے مسترد کردیا۔

مسلم لیگ ن کی نائب صدر نے کہا کہ فارن فنڈڈ فتنے نے جھوٹ بولنے کے سوا کوئی کام نہیں کیا، اگر اسٹیبلشمنٹ نے انہیں نوازشریف کی کرپشن کے بارے میں کچھ بولا تھا تو ثبوت دیکھنے چاہیے تھے کیونکہ عدالتیں شواہد اور ثبوت کی بنیاد پر ہی فیصلے دیتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کا لانگ مارچ پانچ دن سے لاہور میں پھنسا ہوا ہے، روزانہ یہ دو سے تین گھنٹے سفر کر کے لانگ مارچ ختم کردیتے ہیں، اسی طرح کا سلسلہ چلتا رہا تو یہ ایک ماہ میں اسلام آباد پہنچے گا۔

نائب صدر مسلم لیگ (ن) کا مزید کہنا تھا کہ عمران خان رات میں ان کے پیر جبکہ دن میں گریبان پکڑتا ہے، رات کو چھپ چھپ کر ہونے والی ملاقاتوں کے حوالے سے اب قوم جان گئی ہے اور وہ اس فتنے پر یقین نہیں رکھتی۔ عمران خان نے 4 سال میں اتنے لوگ لانگ مارچ میں نہیں ہوتے جتنے لوگ پنجاب حکومت کے اس کی حفاظت پر مامور ہیں۔

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit
Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close