صفحہ اول دنیا کوئی مجرم الیکشن لڑسکتا ہے یا نہیں؟ بھارتی سپریم کورٹ نے تہلکہ خیز فیصلہ سنا دیا

کوئی مجرم الیکشن لڑسکتا ہے یا نہیں؟ بھارتی سپریم کورٹ نے تہلکہ خیز فیصلہ سنا دیا

53 second read
0
0
Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

بھارت کی سپریم کورٹ نے قراردیا ہے کہ کسی سیاستدان کوفوجداری مقدمےکی بنیادپرنااہل نہیں کیاجاسکتا،مجرمانہ مقدمات کےحامل افرادکےرکن پارلیمنٹ بننےپرکوئی پابندی نہیں تاہم عدالت نے یہ بھی ہدایت کی ہے کہ پارلیمنٹ اس ضمن میں قانون سازی کرے اور یقینی بنائے کہ جرائم میں ملوث افراد سیاست میں نہ آئیں، بھارت میں اس وقت1580ارکان پارلیمنٹ کےخلاف فوجداری مقدمات درج ہیں۔
مجرموں کوالیکشن لڑنےسےروکنےسےمتعلق کیس کی سماعت کے دوران بھارتی حکومت نے سماعت کے دوران موقف اپنایا تھاکہ مقننہ کےدائرہ کارمیں عدلیہ کومداخلت نہیں کرنی چاہیے،عوامی نمایندگی کاایکٹ کسی بھی امیدوارکونااہل کرنےکیلیےموجودہے،عدلیہ انتخابی عمل سےقبل پیشگی شرائط لگاکرکسی فردکےحق کومتاثرنہ کرے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق عدالت عظمیٰ نے مجرموں کا سیاست میں آنے سے روکنے کے لیے قانون سازی کی ہدایت کرتے ہوئے قراردیا ہے کہ موجودہ قانون کے مطابق کسی سیاستدان کو فوجداری مقدمے کی بنیاد پر بھی نااہل نہیں کیا جاسکتا۔ یادرہے کہ پاکستان میں سابق وزیراعظم نوازشریف کو نیب ریفرنس اور بدعنوانی کے شک پر نااہل قراردیاجاچکا ہے ۔ دوسری طرف عدالت نے جیل ریفارمز پر3 رکنی کمیٹی تشکیل دےدیجس کی سربراہی سابق جج امیتاوا رائے کریں گے۔ بھارتی سپریم کورٹ کے مطابق کمیٹی جیل ریفارمز پر اپنی تجاویز پیش کرے گی ،سرکاری حکام کارروائی کی رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرائیں گے۔

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit
مزید مماثل خبریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Check Also

سعودی صحافی جمال خاشقجی سال 2018 کی اہم ترین شخصیت قرار

نیویارک: استنبول میں قتل کیے جانے والے سعودی صحافی جمال خاشقجی کو سال 2018 کی اہم ترین شخص…