More share buttons
Share with your friends










Submit
Featuredدنیا

ہندو انتہا پسندوں نے مسلمان نوجوان کا بازو کاٹ دیا

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

نئی دہلی : بھارتی ہندوؤں انتہا پسندوں نے بازوں پر 786 لکھا ہونے پر مسلمان نوجوان کا بازو کاٹ دیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق یہ افسوسناک واقعہ ریاست ہریانہ کے شہر پانی پت میں پیش آیا، جہاں ملازمت کی تلاش میں آنے والے نوجوان کو بدترین تشدد کے بعد بازو کاٹ کر نیم مردہ حالت میں ریلوے پٹری پر پھینک دیا۔

متاثرہ نوجوان کے بھائی اکرام سلمانی کا کہنا ہے کہ میرا بھائی چار روز بعد ہوش میں آیا ہے اور اب بھی اس قدر صدمے میں ہے کہ کچھ بھی بول نہیں پارہا، الٹا پولیس نے ہمارے خلاف ہی پرچہ کاٹ دیا۔

اکرام سلمانی کا کہنا کہ میرا 28 سالہ بھائی کے سر پر اینٹ ماری گئی، اس کے پیر میں کیل چبائی گئی جبکہ ایک بھی کاٹ دیا گیا جسے ہم نے جائے وقوعہ سے آٹھ کلومیٹر دور تک تلاش کیا لیکن ہاتھ نہیں ملا، اور اب پولیس نے اسی مقام سے میرے بھائی کا تلاش کیا ہے۔

متاثرہ نوجوان کے بھائی کا کہنا ہے کہ پولیس نے 28 سالہ بھائی کا کٹا ہوا ہاتھ بعد میں جائے وقوعہ پر لاکر ڈالا ہے۔

دوسری جانب ملزم جے پال سینی کے فریق نے الزام عائد کیا ہے کہ اخلاق ان کے بچے کو چوری کرنے کی کوشش کر رہا تھا۔

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit
Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close