صفحہ اول پاکستان سندھ مصنوعی قیادت و کرپٹ نظام کے ذریعے کوئی تبدیلی نہیں آسکتی، محمد حسین محنتی

مصنوعی قیادت و کرپٹ نظام کے ذریعے کوئی تبدیلی نہیں آسکتی، محمد حسین محنتی

54 second read
0
0
Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

ہالا: جماعت اسلامی سندھ کے امیر محمد حسین محنتی نے کہا ہے کہ کلمے کی سربلندی اور قرآنی قانون کے نفاذ کے ذریعے ہی ملک میں حقیقی تبدیلی لائی جاسکتی ہے، مصنوعی قیادت و کرپٹ نظام کے ذریعے کوئی تبدیلی نہیں آسکتی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ ہالا میں منعقدہ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا، قبل ازیں مرکزی مجلس شوریٰ کے رکن حافظ لطف اللہ بھٹو، ضلعی امیر فقیر محمد لاکھو نے بھی خطاب کیا۔ اس موقع پر نومنتخب ضلعی امیر نے حلف بھی اٹھایا۔

محمد حسین محنتی نے مزید کہا کہ دین سے دوری اور مفاد پرست ٹولے کی وجہ سے سندھ کے عوام غربت و افلاس اور مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں، سندھ باب الاسلام ہے، اسلام و پاکستان ایک دوسرے کے ساتھ لازم و ملزوم ہیں، قیام پاکستان کے وقت شہداء کی قربانیوں و جدوجہد کا مقصد بھی یہی تھا کہ یہاں کلمہ کی سربلندی اور قرآن و سنت کا نظام ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ امت کو سامراجی سازشوں کو ناکام بنانے اور اپنے مسائل کے حل کیلئے غیروں سے امیدیں باندھنے کی بجائے اپنا تعلق قرآن و سنت سے مضبوط جوڑنا ہوگا، اسی میں ہی دنیا و آخرت کی کامیابی مضمر ہے۔ حافظ لطف اللہ بھٹو نے کہا کہ دنیاوی مال و دولت بنک بیلنس نہیں بلکہ اصل کامیابی آخرت میں جنت کا حصول ہے، دنیا کی زندگی دکھاوا اور دھوکے کے سامان کے سوا کچھ بھی نہیں ہے۔ امیر ضلع فقیر محمد لاکھو نے کہا کہ جماعت اسلامی اقامت دین کی تحریک ہے، جو معاشرے کی اصلاح اور اللہ کی دھرتی پر اللہ کے نظام کو نافذ کرنا چاہتی ہے، کارکن اس مقصد کو حاصل کرنے کیلئے بھرپور جدوجہد کریں۔

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit
مزید مماثل خبریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Check Also

سانحہ 12 مئی کیس میں وسیم اختر پر فردِ جرم عائد

سانحہ 12 مئی 2007  کے 2 مقدمات میں میئر کراچی وسیم اختر و دیگر ملزمان پر انسدادِ دہشت…