More share buttons
Share with your friends










Submit
سندھ

پولیس نے اینکر مرید عباس سمیت دہرے قتل کی ابتدائی تفتیشی رپورٹ تیار کرلی

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit

کراچی: سندھ پولیس نے کراچی کے علاقے ڈیفنس میں اینکر مرید عباس سمیت دہرے قتل کی ابتدائی تفتیشی رپورٹ تیار کرلی ہے۔ رپورٹ میں مقتول مرید عباس کی بیوہ زارا عباس اور ملزم عاطف زمان سمیت 6 افراد کے ریکارڈ کئے گئے بیان کی تفصیل موجود ہے۔

مقتول مرید عباس اور خضر کا عاطف زمان سے پیسے کے لین دین پر تنازع تھا

حاصل ہونے والی ابتدائی تفتیشی رپورٹ کے مطابق پولیس کو مرید عباس کی اہلیہ زارا عباس نے بیان دیا ہے کہ مقتول مرید عباس اور خضر کا عاطف زمان سے پیسے کے لین دین پر تنازع تھا اور واقعے کے روز 8 بج کر 4 منٹ پر مرید نے فون پر بتایا کہ عاطف نے 50 لاکھ دینے کے لئے بلایا ہے۔

انہوں نے بیان میں مزید کہا ہے کہ 8 بج کر 38 منٹ پر مرید کے دوست عمر ریحان کی بیوی کی مجھے کال آئی اور عمر کی بیوی نے بتایا کہ عاطف نے مرید کو فائرنگ کرکے زخمی کردیا ہے۔

زارا عباس نے یہ بھی بتایا ہے کہ وہ اپنے والد کے ہمراہ عاطف زمان کے دفتر پہنچیں، دفتر کی دوسری منزل پر مرید زخمی حالت میں تھے، اسپتال پہنچنے پر پتہ چلا کہ عاطف نے خضر کو بھی فائرنگ کرکے زخمی کردیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: اینکر مرید عباس کو قتل کرنے والے ملزم عاطف زمان نے اپنا پہلا فراڈ کس کے ساتھ کیا تھا؟ خبر آگئی

تفتیشی ٹیم نے اس واقعے سے جڑے ہوئے مزید افراد عدنان مصطفیٰ، عمر ریحان، اسامہ احمد، عبدالحلیم اور عاطف زمان کا اسپتال میں بیان ریکارڈ کرلیا ہے۔

ابتدائی رپورٹ میں عاطف زمان کی جانب سے پولیس کو بتایا گیا ہے کہ اس نے واقعے کے روز خضر حیات کو فون کرکے ڈیفنس میں خیابانِ بخاری بلایا تھا، خضر حیات اپنی کار میں خیابانِ بخاری پہنچا۔

عاطف نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ میں نے خضر کو اپنے بھائی عادل زمان کے پستول سے فائرنگ کرکے قتل کیا اور اسی پستول سے فائرنگ کرکے مرید کو بھی قتل کیا، فائرنگ کے وقت عادل زمان ساتھ موجود تھا۔

ملزم عاطف کے مطابق عادل زمان موقع سے فرار ہوگیا اور میں گھر آگیا، میں نے گھر آکر خود کو بھی اسی پستول سے گولی مار لی۔ اس مقدمے میں ملوث دیگر ملزمان عادل زمان اور چوہدری ندیم مفرور ہیں، ان ملزمان کی گرفتاری کے لئے پولیس کی جانب سے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ مقدمے کی تفتیشی ٹیم نے کیس کی یہ ابتدائی رپورٹ اعلیٰ افسران کو بھجوا دی ہے۔

Share on Pinterest
Share with your friends










Submit
ٹیگز
مزید دیکھیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے